Wednesday | 21 October 2020 | 4 Rabiul-Awal 1442
Gold NisabSilver NisabMahr Fatimi
$5360.06$484.12$1210.29

Fatwa Answer

Question ID: 151 Category: Permissible and Impermissible
Permissibility of Using Dart Foam Cups

Assalamualaikum Warahmatullah

We have observed that in many restaurants and stores across America, a brand of Styrofoam cups called “Dart” is being used. Especially to serve hot drinks such as tea and coffee. We have also found out that the company which makes this cup, utilizes a special chemical zinc stearate which is extracted from beef or pork tallow/fat. This chemical acts as a releasing agent for the cups from the metallic mold. In the light of the usage of such a chemical, the question is, will it be permissible to drink hot or cold drinks in such cups. A quick answer will be appreciated. JazakAllahu Khaira

Walaikumassalam Warahmatullahi Wabarakatuhu

الجواب وباللہ التوفیق

As per the previously received information from the company, there is a possibility of usage of both permissible and impermissible ingredients, therefore the usage of any such containers will be considered mushtabah (suspicious), and according to the ahadith of Rasulullah Sallallaho Alyhi Wasallam it has been instructed to refrain from things which are mushtabah so that one does not get involved in haram. In addition, we are currently unable to perform further research on whether the impermissible ingredients utilized in the process are still present at the end in an unchanged manner or not, therefore, it is recommended to refrain from using these products.

عن أبي الحوارء السعدي قال قلت للحسن بن علي : ما حفظت من رسول الله صلى الله عليه و سلم ؟ قال حفظت من رسول الله صلى الله عليه و سلم دع ما يريبك إلى مالا يريبك

(سنن ترمذی: كتاب صفة القيامة والرقائق والورع عن رسول الله صلى الله عليه و سلم،۲۵۱۸)

عن النعمان بن بشير قال سمعته يقول:سمعت رسول الله صلى الله عليه و سلم يقول ( وأهوى النعمان بإصبعيه إلى أذنيه )

( إن الحلال بين وإن الحرام بين وبينهما مشتبهات لا يعلمهن كثير من الناس فمن اتقى الشبهات استبرأ لدينه وعرضه ومن وقع في الشبهات وقع في الحرام كالراعي يرعى حول الحمى يوشك أن يرتع فيه۔

(صحیح مسلم:کتاب المساقاۃ،۱۵۹۹)

فقط واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 151 Category: Permissible and Impermissible
ڈارٹ کمپنی کے فوم کپس وغیرہ کے استعمال کا حکم

 

 

السلام علیکم ورحمۃ اللہ، ہمارے علم میں یہ بات آئی ہے کہ ڈارٹ نامی کپ امریکہ کی بہت ساری ہوٹلوں ریسٹورینٹ اور مختلف چائے خانوں وغیرہ میں استعمال ہوتے ہیں ،خاص کر چائے اور کافی پیش کرنے کیلئے۔ ہمیں یہ بھی معلوم ہوا کہ جو کمپنی یہ کنٹینرز بناتی ہے   اس میں وہ سوّر یا گائے کی چربی کا ایک خاص حصہ جس کو زینک اسٹیریٹ کہا جاتا ہے اس کی جو چکنائی ہوتی ہے اس کو استعمال کرتی ہے جب کپ مشین کے اُوپر اپنی گولائی میں آرہے ہوتے ہیں تو گول ہوجانے کے بعد یا ان کی ہیئت قائم ہوجانے کے بعدجب اس کپ کو اس مشین کے اس حصہ میں سے باہر نکالنا ہوتا ہے تو اس میں اندر مشین میں اندر چکنا رکھنے کیلئے یہ زینک سیٹریٹ کا استعمال کیا جاتا ہے ، اب سوال یہ ہے کہ اس کپ میں گرم یا ٹھنڈے مشروبات پیش کرنا اسلامی طور پر جائز ہوگا یا نہیں، جلد جواب کیلئے بڑی مہربانی ہوگی جزاک اللہ خیرا۔

 

 

 

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ

الجواب وباللہ التوفیق

ان گلاسوں یا پیالوں کے بارے میں اس کمپنی کی جانب سےفراہم کردہ تفصیلات کےمطابق جائز اور ناجائز سب چیزوں کے ملانے کا امکان ہے،،اس لئے وہ مشتبہ ہیں،اور احادیث میں مشتبہ چیزوں سے اللہ کے نبی نے بچنے کا حکم دیا ہے،تاکہ آدمی حرام میں مبتلا نہ ہوجائے،اور ناجائز چیزوں کے ملانے کے بعد ان کی قلب ماہیت کی تحقیق سےبھی فی الحال ہم قاصر ہیں اس لئے ان کا استعمال نہیں کرنا چاہئے۔

عن أبي الحوارء السعدي قال قلت للحسن بن علي : ما حفظت من رسول الله صلى الله عليه و سلم ؟ قال حفظت من رسول الله صلى الله عليه و سلم دع ما يريبك إلى مالا يريبك

(سنن ترمذی: كتاب صفة القيامة والرقائق والورع عن رسول الله صلى الله عليه و سلم،۲۵۱۸)

عن النعمان بن بشير قال سمعته يقول:سمعت رسول الله صلى الله عليه و سلم يقول ( وأهوى النعمان بإصبعيه إلى أذنيه )

( إن الحلال بين وإن الحرام بين وبينهما مشتبهات لا يعلمهن كثير من الناس فمن اتقى الشبهات استبرأ لدينه وعرضه ومن وقع في الشبهات وقع في الحرام كالراعي يرعى حول الحمى يوشك أن يرتع فيه۔

(صحیح مسلم:کتاب المساقاۃ،۱۵۹۹)

فقط واللہ اعلم بالصواب