Wednesday | 19 June 2019 | 15 Shawaal 1440

Fatwa Answer

Question ID: 431 Category: Worship
Yellow Discharge

Assalamualaikum,

I have a question about yellow discharge. During the last days of my periods I get yellow color and yellow discharge. The yellow colored substance is more like a blood like substance and the yellow discharge is like the substance of white discharge in its form and ماده. This yellow discharge and color sometimes stops before ten days, sometimes a few days after ten days, and sometimes it happens many days after my period. I am confused on when to take shower. Sometimes I shower two times. I asked my doctor and she said I don't have to worry about the yellow. If only brown or red comes then I have to worry. Also, one Aalimah told me these things happen in this age because of hormones, I don't have to overthink too much. Because I usually get yellow discharge in the non period time, I thought maybe if the yellow discharge comes it doesn't affect my aadat and periods, but if the haiz-like substance comes, then I have to think it is istihaaza. Then I showered when I saw that the yellow haiz-like substance stops even if the yellow discharge comes. Then I became shakki and then showered on the completion of 10 days too. Usually it doesn't stop before 10 days are done, that's why I didn't know my aadat and always showered after 10 days. This month this happened:

  • Start of period: February 5, 2019 around 6:50 AM
  • End of period: February 14, 2019 around 1:30 PM

Then on February 21, 2019 a foul smelling yellow substance came out. I am sure this isn't istihaaza. Thereafter, there was yellow discharge for a few days and today also yellow discharge came. And yellow stain also came sometime in February after my period. Please tell my what my aadat is and when to shower and end my period.

Jazakallaah

الجواب وباللہ التوفیق

This issue has few conditions:

  • Within ten days of the start of the blood discharge if the yellow discharge is seen again then it will still be considered حیض (menstrual period). Once it stops it will be necessary to take bath again.
  • If it extends beyond ten days then per the habitual days it will be حیض (menstrual period) and the rest will be the days of استحاضہ (Istihadah).
  • If after ten days during the days of purity, e.g., within fifteen days this yellow color liquid comes then it will not be حیض (menstrual period), during these days you will be in the state of purity.
  • If this substance is seen after fifteen days of purity and is seen at least three days or is seen during the habitual days then it will be considered حیض (menstrual period).
  • Pure white substance which is seen after the حیض (menstrual period), this is not حیض (menstrual period) rather it is the sign of purity. You will remain pure after that.

According to the detail of your menstrual cycle written in your inquiry, February 5th to February 14th will be your days of the menstrual period. During these days you are excused of praying Salaat and the rulings about the impurity will also apply.

And the spots seen on February 21st are not considered as menstrual period, you will be pure during those days, and it will be necessary for you to pray Salaat during those days.

And when this spot was seen again on February 5th, this is the beginning of the habitual days. The ruling about this is mentioned in No. 1 above. If the condition is different then write again to ask the ruling.

NOTE: We don’t know your age. The Rulings in some issues depend on the age whether young age or old age. Knowing the age the Shara’i Ruling can be advised accordingly.

لانہا قیدت بما بعدالطہر ''…(البحرالرائق : ٣٣٤/١)''

والبیاض علی مذہبہم جمیعا لیس بحیض ''…(فتاوی التاتارخانیة: ٤٧٦/١)

 (ومانراہ) من لون ککدرة وترابیة( فی مدتہ) المعتادة( سوی بیاض خالص)''…(درمختار علی ہامش ردالمحتار :٢١١،٢١٢/١)

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 431 Category: Worship
زرد مادہ ایام پاکی وناپاکی میں آجائے تو اس کا حکم

السلام علیکم

میرا سوال پیلے سیال مادے کے  نکلنے کے بارے میں ہے میری ماہواری کے آخری دنوں میں مجھے پیلا رنگ اور پیلا  سیال مادہ نکلتا ہے، پیلے رنگ کا مادہ خون کی طرح کا ہوتا ہے اور پیلا سیال مادہ (ڈسچارج) سفید سیال مادے کی طرح ہوتا ہے، یہ دونوں دس دن سے پہلے بند ہوجاتے ہیں، کبھی کبھار کچھ دن دس دن سے زیادہ اور کبھی ماہوراری کے کافی دنوں کے بعد میں الجھن میں ہوں کہ غسل کب کروں ،کبھی میں دو دفعہ غسل کرتی ہوں ، میں نے اپنی ڈاکٹر سے پوچھا اس نے کہا کہ مجھے پیلے کے بارے میں فکر نہیں  کرنی چاہیئے اگر بھورا لال آئے تو پھر مجھے فکر کرنی ہے، اس کے علاوہ ایک عالمہ نے مجھے  بتایا  کہ اس عمر میں یہ چیزیں ہوتی ہیں ،ہارمونز کی وجہ سے مجھے اس کے بارے میں زیادہ سوچنا نہیں چاہئے ؛کیونکہ مجھے پیلا ڈسچارج عام طور پر ماہواری کے علاوہ دنوں میں آتا ہے، اس لیے میں نے سوچا کہ اگر پیلا ڈسچارج آتا ہے تو یہ میری عادت اور ماہواری کو متاثر نہیں کرتا، لیکن اگر حیض کی طرح کا مادہ نکلتا ہے تب مجھے اسے استحاضہ سمجھنا ہے، پھر میں نے غسل کیا جب میں نے دیکھا کہ پیلا حیض کی طرح کا   مادہ بند ہوگیا جب کہ پیلا سیال مادہ (ڈسچارج) ابھی آرہا تھا، پھر میں شکی ہوگئی اور دس دن پورے ہونے پر دوبارہ نہائی ، عام طور پر یہ دس دن سے پہلے بند نہیں ہوتا ہے، اس وجہہ سے مجھے اپنی عادت کا پتہ نہیں تھا اور ہمیشہ دس دن کے بعد نہائی  اس مہینے یہ ہوا۔

ماہواری شروع ہوئی ،فبروری ۵؍۲۰۱۹،تریباً:صبح ۶:۵۰، ماہواری ختم ہوئی : فبروری ۱۴؍۲۰۱۹،تقریباً:دوپہر ۱:۳۰۔

پھر فبروری ۲۱؍۲۰۱۹؁ء کو ایک بدبو دار پیلا  مادہ نکلا، مجھے یقین ہے کہ یہ استحاضہ نہیں ہے، اس کے بعد کچھ دن تک پیلا ڈسچارج تھا اور آج مارچ ۵ کو بھی پیلا ڈسچارج نکلا، فبروری میں ماہواری کے بعد پیلے دھبے بھی آئے، برائے مہربانی مجھے بتائیے کہ میری عادت کیا ہے اور مجھے کب ماہواری ختم کرکے غسل کرنا چاہئے

جزاک اللہ خیرا

الجواب وباللہ التوفیق

اس مسئلہ کی چند صورتیں ہیں۔ پہلی صورت یہ ہےکہ خون  شروع ہونے کے بعد دس دن کے اندر زرد رنگ کامادہ دوبارہ نظر آئے تو حیض ہی ماناجائے گا،اس کے ختم ہونے پر دوبارہ غسل کرنا ضروری ہوگا۔

اگر دس دن سے بڑھ جاتا ہے تو ایام عادت کے مطابق حیض ہوگا اور بقیہ استحاضہ کے دن ہوں گے۔

اوراگردس دن بعد پاکی کے ایام میں مثلا بندہ دن کے اندر یہ زردرنگ کا پانی آتاہے تو یہ حیض نہیں ہوگا،ان ایام میں آپ پاک رہیں گی۔

اگر پاکی کے پندرہ دن گزرنے کے بعد یہ مادہ نظر آئے اور کم از کم تین دن نظر آئے یا ایام عادت میں نظر آئے تو پھر حیض شمار ہوگا۔

خالص سفید مادہ جو حیض کے بعد نظر آتا ہے تو وہ حیض نہیں ہوتا ہے ،بلکہ حیض سے پاکی کی علامت ہوتا ہے۔اس کے بعد آپ پاک رہیں گی۔

سوال میں مذکور آپ نے جو ماہواری کی تفصیل لکھی ہے اس اعتبار سے اپ کے ۵ فبروری سے ۱۴ فبروری تک حیض کے ایام ہوں گے ۔ان ایام میں نماز معاف ہے۔اور ناپاکی سے  متعلق احکام بھی لاگو ہوں گے۔

اور ۲۱ فبروری کو جو دھبے نظر آئے ہیں ان کا اعتبار نہیں ہے،اس وقت آپ پاک رہیں گی،اور ان ایام میں آپ کو نماز  اداکرنی ضروری ہوگی۔

اور ۵ فبروری کو دوبارہ یہ دھبہ جب نظر آیا ہے تو یہ ایام عادت کی ابتداء ہے ،اس سے متعلق مسئلہ پہلی شق میں مذکور ہے۔اگر صورت مختلف ہوتو لکھ کر دوبارہ مسئلہ دریافت کرلیں۔

نوٹ : واضح رہےکہ آپ کی عمر کا علم نہیں  ہے،بعض مسائل کا تعلق صغر سنی یا کبر سنی سے بھی ہوتا ہے ،اس کے جاننے کے بعد اس سے متعلق شرعی مسئلہ بتایا جاسکتا ہے۔

''قولہ وماسوی البیاض الخالص حیض… عن ام عطیة قالت کنا لانعد الکدرة والصفرة بعدالطہر شیئا وہذا یدل علی انہما فی ایام الحیض حیض لانہا قیدت بما بعدالطہر ''…(البحرالرائق : ٣٣٤/١)''

والبیاض علی مذہبہم جمیعا لیس بحیض ''…(فتاوی التاتارخانیة: ٤٧٦/١)

 (ومانراہ) من لون ککدرة وترابیة( فی مدتہ) المعتادة( سوی بیاض خالص)''…(درمختار علی ہامش ردالمحتار :٢١١،٢١٢/١)

واللہ اعلم بالصواب