Sunday | 23 February 2020 | 29 Jamadiul-Thani 1441
Gold NisabSilver NisabMahr Fatimi
$4620.94$363.23$908.09

Fatwa Answer

Question ID: 967 Category: Worship
Taharah

Assalamualaikum,

Can you please let me know a book where I can find the proper etiquettes of Taharat? I have always wanted to know how one can maintain taharah while using office restrooms where there is no water sprayers or jugs. Also, can one stand and urinate when there is no availabitity of a sitting toilet?

Jazakallah

الجواب وباللہ التوفیق

  1. When a water container or a pipe is not available then one should use wet tissue paper and clean the area thoroughly such that no trace of the نجاست (impurity) should remain. This way the طہارت (purity) is achieved. After that without using water to clean oneself it is permissible to make Wudu and pray Salat.
  2. Where there is no toilet to sit on, a person can urinate standing as needed but it is necessary to be cautious that urine should not touch the clothes or the body.

Note: You may read بہشتی زیور (Bahishti Zewar) by Hazrat Hakeemul Ummat Maulana Ashraf Ali Thanwi Saheb or طہارت اور نماز کے مسائل (Taharat aur Namaz ke Masail) by Mufti Mukarram Mohiyyuddin Saheb.   

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 967 Category: Worship
طہارت کے آداب

 

مجھے طہارت کے صحیح آداب پر کتاب بتادیجئے ،آفس کے باتھ روم میں لوٹا یا پانی کی پائپ نہ ہو تو وہاں طہارت کیسے کی جائے؟ جہاں بیٹھنے کا ٹوائیلٹ نہ ہو کیا وہاں کھڑے ہوکر پیشاب کیا جاتاسکتا ہے؟

جزاک اللہ

 

الجواب وباللہ التوفیق

(۱)جس جگہ طہارت کیلئے لوٹا یا پانی کی پائپ نہ ہو وہاں استنجاء کیلئے گیلے ٹشو پیپر سے لیکر اچھی طرح صاف کرلیا جائے کہ نجاست بالکل بھی باقی نہ رہے، اس طریقہ سے طہارت حاصل ہوجاتی ہے۔ اس کے بعد بغیر پانی استعمال کیے وضو کرکے نماز پڑھنا جائز ہے،۔

(۲)جہاں بیٹھنے کا ٹوئلٹ نہ ہو وہاں ضرورت پڑنے پرکھڑے ہوکر پیشاب کیا جاسکتا ہے ، لیکن اس کا خیال رکھنا ضروری ہے  کہ کپڑے اور بدن کو پیشاب نہ لگنے پائے۔ 

 طہارت سے متعلق بہشتی زیور از حضرت حکیم الامت رحمہ اللہ یا طہارت اور نماز کے مسائل از مفتی مکرم محی الدین صاحب مد ظلہ مطالعہ کرسکتے ہیں۔

واللہ اعلم بالصواب