Friday | 27 November 2020 | 12 Rabiul-Thani 1442

Fatwa Answer

Question ID: 1152 Category: Permissible and Impermissible
Working for Uber Eats or Other Food Delivery Services

Is working for Uber Eats food pickup/delivery (or other similar food delivery services) permissible for a Muslim? The food they deliver can either be Haram or Halal. As their employee, you pickup food from the shop and deliver it to the customer who ordered it.

 

الجواب وباللہ التوفیق

In the food delivery services, majority of the food which is being delivered is haram, since supplying haram is considered makruh tahrimi, the ulamah kiram have instructed that the person should give the haram portion of their salary as sadaqah. Therefore, in addition to discharging of the above mentioned sadaqah, one should keep on looking for a new job and as soon as they find a new job, leave the food delivery job.

وَمَنْ حَمَلَ لِذِمِّيٍّخَمْرًا بِأَجْرٍ طَابَ لَهُ) عِنْدَ الْإِمَامِ (وَعِنْدَهُمَا يُكْرَهُ) لَهُ ذَلِكَ لِوُجُودِ الْإِعَانَةِ عَلَى الْمَعْصِيَةِ وَقَدْ صَحَّ أَنَّ النَّبِيَّ - عَلَيْهِ الصَّلَاةُ وَالسَّلَامُ - «لَعَنْ فِي الْخَمْرِ عَشْرًا وَعَدَّ مِنْهَا حَامِلَهَا وَالْمَحْمُولَ إلَيْهِ

{مجمع الأنهر في شرح ملتقى الأبحر}

واللہ اعلم بالصواب

Question ID: 1152 Category: Permissible and Impermissible
کھانا ڈیلیور کرنے والی کمپنیوں کے لئے ڈرائیور کے طور پر کام کرنے کا حکم

 

کیا اوبر ایٹس اور اسی طرح کی دوسری فوڈ ڈیلوری سروسز کے لئے ڈرائیور کی جاب کرنا جائز ہے؟ جو کھانا دوکانوں سے بھیجا جاتا ہے وہ حرام بھی ہو سکتا ہے اور حلال بھی، کام کرنے والے کو وہ کھانا دوکان سے لینا ہوتا ہے اور کسٹمر کو جا کر دے دینا ہوتا ہے۔

 الجواب وباللہ التوفیق

اوبر ایٹس وغیرہ میں یہاں چونکہ حرام ہی کا غلبہ ہوتا ہے اور حرام  چیزوں کی سپلائی مکروہ تحریمی ہے ،علماء نے  اس طرح کے معاملات میں حرام آمدنی  کے حصہ کو صدقہ کرنے کا حکم دیا ہے،اس لئے صدقے کے ساتھ ساتھ متبادل نوکری کی کوشش کرتے رہیں ،اور  حلال نوکری ملنے پر اس  سے دستبردار ہوجائیں۔

وَمَنْ حَمَلَ لِذِمِّيٍّخَمْرًا بِأَجْرٍ طَابَ لَهُ) عِنْدَ الْإِمَامِ (وَعِنْدَهُمَا يُكْرَهُ) لَهُ ذَلِكَ لِوُجُودِ الْإِعَانَةِ عَلَى الْمَعْصِيَةِ وَقَدْ صَحَّ أَنَّ النَّبِيَّ - عَلَيْهِ الصَّلَاةُ وَالسَّلَامُ - «لَعَنْ فِي الْخَمْرِ عَشْرًا وَعَدَّ مِنْهَا حَامِلَهَا وَالْمَحْمُولَ إلَيْهِ

{مجمع الأنهر في شرح ملتقى الأبحر}۔

فقط واللہ اعلم بالصواب